کشمیر ڈے ٹرائی اینگولر کرکٹ سیریز  رجسٹرار الیون نے جیت لی.

0
141
چیف گیسٹ سید سرفراز علی کے ساتھ رجسٹرار الیون کی ٹیم کا گروپ فوٹو، ایڈیشنل رجسٹرار زبیر حمیدی، ایکٹنگ کنونیر اسپورٹس قاضی نصر عباس, فرسٹ کلاس کرکٹر شوکت مرزا ، ڈائریکٹر اسپورٹس مبشر مختار اور اقبال قریشی بھی موجود ہیں۔
کشمیر ڈے ٹرائی اینگولر کرکٹ سیریز  رجسٹرار الیون نے جیت لی.
ضرورت پڑی تو ہر پاکستانی اپنے کشمیری بھائیوں کے لئے  جان کی بازی لگانے کو تیار ہو گا۔ سید سرفراز علی۔
کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لئے سرسید یونیورسٹی نے 21 فروری کو چانسلر الیون، وائس چانسلر الیون اور رجسٹرار الیون کی ٹیموں کے درمیان ٹرائنگولر کرکٹ سیریز کا انعقاد کیا۔ سیریز کے پہلے میچ میں رجسٹرار الیون نے چانسلر الیون کو 18 رنز سے شکست دی۔ 6 اوّرز کے اس میچ میں رجسٹرار الیون نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے فاروق کے جارحانہ31 رنز کی بدولت جس میں 4 شاندار چھکے بھی شامل تھے 84 رنز کا ٹارگٹ سیٹ کیا۔  چانسلر الیون مقررہ اوّرز میں 6 وکٹوں کے نقصان پر 65 رنز بنا سکی۔
دوسرے میچ  میں چانسلر الیون نے وائس چانسلر الیون کو 13 رنز سے شکست دی۔ چانسلر الیون نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 5 وکٹوں کے نقصان پر 74 رنز اسکور کیے مقابلے میں وائس چانسلر الیون 7 وکٹوں کے نقصان پر 61 رنز بنا کے ہمّت ہار گئی۔ تیسرے میچ میں رجسٹرار الیون نے وائس چانسلر الیون کو 8 رنز سے شکست دی۔ رجسٹرار الیون نے مقررہ اوورز میں 3 وکٹوں کے نقصان پر 70 رنز اسکور کئے۔  وائس چانسلر الیون سات وکٹوں کے نقصان پر 62 رنز ہی بنا سکی۔
فائنل میچ میں رجسٹرار الیون نے خالد کے 20 رنز کی بدولت 67 رنز کا ٹارگٹ سیٹ کیا۔ چانسلر الیون شاندار مقابلے کے باوجود مقررہ اوورز میں میں 5 وکٹوں کے نقصان پر 64 رنز ہی بنا سکی۔
 میچ کے مہمان خصوصی سرسید یونیورسٹی کے رجسٹرار کموڈور ریٹائرڈ سید سرفراز علی  تھے.
 اختتامی تقریب  میں سید سرفراز علی نے دونوں ٹیموں کے کھلاڑیوں میں انعامات تقسیم کیے انہوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ بھارت کے عزائم کبھی کامیاب نہیں ہوں گے, کشمیر جلد انڈیا کے تسلّط سے آزاد ہوگا. پاکستان کی عوام اور حکومت کشمیریوں کے ساتھ ہے ضرورت پڑی تو ہر پاکستانی کشمیر کے لئے اپنا لہو دینے کے لئے تیار ہوگا۔ اس موقع پر ایڈیشنل رجسٹرار زبیر حمیدی، ایکٹنگ کنونیر اسپورٹس قاضی نصر عباس, فرسٹ کلاس کرکٹر شوکت مرزا ، ڈائریکٹر اسپورٹس مبشر مختار, اقبال قریشی, فیصل سلیم، حسن زکی خواجہ مسعود، محمد عقیل، محمد ابرار، عدنان باجوا، آصف ظہیر اور طارق خان بھی موجود تھے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here